May 30, 2024
Chicago 12, Melborne City, USA
romantic poetry

Habib Jalib Romantic Poetry – Collection Of Urdu Romantic Poetry

Habib Jalib is known for his fearlessness and boldness. He was a vocal person who always stood fearlessly with his opinions and went against the Pakistani government and opposed martial law openly.

Consequently, he also went to jail.

From the above introduction, one can think that if this person is a poet, he must write only on hard-hitting social topics. In reality, Habib Jalib is well-known for his romantic poetries.

In this post, Sadipoetry.com is presenting some romantic Urdu Shayaris written by Legendary Habib Jalib Shab.

So, let’s start reading this beautiful post on Urdu Romantic Poetry.

جن کی یادوں سے روشن ہیں میری آنکھیں 
دل کہتا ہے ان کو بھی میں یاد آتا ہوں 
شعلے ہیں تو کیوں ان کو بھڑکتے نہیں دیکھا 
ہیں خاک تو راہوں میں بکھر کیوں نہیں 
اسے تھا شوق بہت مجھ کو اچھا رکھنے کا 
یہ شوق اروں کو شاید برا لگا ہوگا 
اس پھول کو پانا تو بڑی بات تھی جالب
اس پھول کو چھونے میں بھی ناکام رہے ہم
نبھانے آئے تھے جو رسمِ دوستی ہم سے
انہی کے تیر ستم کا یہ دل نشانہ ہے
غم کے سانچے میں ڈھل سکو تو چلو 
تم مرے ساتھ چل سکو تو چلو 
دور تک تیرگی میں چلنا ہے 
صورت شمع جل سکو تو چلو 
ان کے آنے کے بعد بھی جالب 
دیر تک ان کا انتظار رہا 
بے نور ہو چکی ہے بہت شہر کی فضا 
حق میں لوگوں کے ہماری تو ہے عادت لکھنا 
نہ صلے کی نہ ستائش کی تمنا ہم کو 
حق میں لوگوں کے ہماری تو ہے عادت لکھنا 
جانے کس حال میں ہیں کون سے شہروں میں ہیں وہ 
زندگی اپنی جنہین ہم نے بنائے رکھا 
اس ستم گر کی حقیقت ہم پہ ظاہر ہو گئی 
کتم خوش فہمی کی منزل کا سفر بھی ہو گیا 
سوئے ہوئے ہیں لوگ تو ہوں گے سکون سے 
ہم جاگنے کا روگ لگائیں کسی کو کیا 
دنیا تو چاہتی ہے یوں ہی فاصلے رہیں
دنیا کے مشوروں پہ نہ جا، اس گلی میں چل
اُس ستمگر کی حقیقت ہم پر زہر ہو گئی
ختم خوش فہمی کی منزل کا سفر بھی گُم گیا
ظلم کے ہوتے امن کہاں ممکن یارو؟
اسے مٹا کر جگ میں امن بحال کرو
ان کے آنے کے بعد بھی جالب،
دیر تک اُن کا انتظار رہا
پا سکے گے نہ عمر بھر جس کو
جستجو آج بھی اُسی کی ہے
نہ تیری یاد، نہ دُنیا کا غم، نہ اپنا خیال
عجیب صورتِ حال ہو گئی پیارے
جن کی خاطر شہر بھی چھوڑا، جن کے لئے بدنام ہوئے
آج وہی ہم سے بیگانے، بیگانے سے رہتے ہیں
چھوڑ اس بات کو اے دوست کہ تجھ سے پہلے،
ہم نے کس کس کو خیالوں میں بسایا رکھا

Conclusion

“Jin Ke Khatir Sehar Choda
Jin Ke Liye Badnaam Hue
Aaj Wohi Ham Se Begaane
Begaane Se Rehte Hai”

Habib Jalib is an important name in Pakistani poetry. Without him, the list of the finest Pakistani poets won’t be completed. Now he is no longer with us but people still love to read and recite his work, it shows the quality and people’s love toward him.

In this post, Sadipoetry.com’s team presented the collection of Romantic Urdu Poetries written by Habib Jalib.

As the post is about to end, our team wishes that you like reading this post and will share it with your friends and family who love reading Urdu Romantic poetries.